کورونا کی وباء : لاہور قلندرز کے بین ڈنک پاکستان میں کیوں رک گئے؟ جانیے انکی اپنی زبانی

 

دنیا بھر میں بڑھتے ہوئے کورونا وائرس کے خدشات کے باوجود لاہور قلندرز کے بلے باز بین ڈنک نے پاکستان میں قیام کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔لاہور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈنک کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے متعلق پی ایس ایل مینجمنٹ سے موصول ہونے والی اطلاعات کی بنا پر وہ پاکستان میں قیام کرنےکے ۔اپنے فیسلے پر مطمئن ہیں

"پی ایس ایل مینجمنٹ ہمیں کورونا وائرس کی صورتحال کے بارے میں مکمل طور پر آگاہ رکھے ہوئے ہے ۔ بحیثیت فرد ، یہ میرا فیصلہ ہے کہ میں گھر جانا چاہتا ہوں یا پاکستان میں رہنا چاہتا ہوں۔ اس مرحلے پرمیں پاکستان میں رہنا مناسب سمجھ رہا ہوں ۔

ڈنک کا کہنا تھا کہ۔ “ہمیں کورونا کی صورتحال کے بارے میں روزانہ تازہ ترین معلومات مل رہی ہیں۔ اگر صورتحال یہی رہتی ہے تو فی الحال میں یہی رہنا چاہوں گا، میرا اچھا ٹائم گزر رہا ہے میں آگے بھی کھیلنا چاہوں گا لیکن اس سے پہلے حالات کا جائزہ لوں گا۔

ڈنک کا مزید کہنا تھا کہ لاہور قلندرزکے ساتھ واقعتا اچھا وقت گزارا ہے اور ہماری دیکھ بھال بہت اچھی ہو رہی ہے۔ لہذا میں چاہتا ہوں کہ فائنل میں کامیابی حاصل کرنے کے لیے میں اپنا حصہ ڈالوں۔”

ڈنک نےکہا کہ “ہمیں اپنے ہوم گراؤنڈ میں جو مدد ملی ہے وہ شاندار رہی۔ اہل لاہور نے واقعتا ہمارے ساتھ صبر کا مظاہرہ کیا ہے۔ ہمارے پاس ابھی بھی ایک بہت بڑا کام باقی ہے ، لہذا میں آنے والے ہفتے کے لئے واقعی بہت پرجوش ہوں۔ ’’

یاد رہے کہ پی ایس ایل کی پانچوں فرنچائزز سے تعلق رکھنے والے 14 غیر ملکی کھلاڑیوں اور دو کوچنگ سٹاف ممبران نے اب تکر پاکستان چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تاہم ، لاہور قلندرز کا پورا غیر ملکی دستہ ابھی بھی فرنچائز کے ساتھ ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >