گھر جاکر تنہائی میں بیٹھنے کے بجائے میں یہاں کھیلنا اور چھکے مارنا بہتر ہے ، کرس لین

ملتان سلطان کے خلاف سنچری اسکور کرکے لاہور قلندرز کو سیمی فائنل تک رسائی دلوانے والے کرس لین نے کہا ہے کہ میں اگر چلا جاتا تو مجھے گھر میں تنہائی میں بیٹھنا پڑتا، میں اس کے بجائے یہاں چھکے ماررہا ہوں۔

ملتان سلطان کے خلاف ڈو اینڈ ڈائی میچ میں لاہور قلندرز کو 9 وکٹوں سے فتح دلوانے والے کرس لین نے 12 چوکوں اور 8 چھکوں کی مدد سے 113 رنز بنائے اور ناقابل شکست رہے، ان کی بہترین بیٹنگ کی بدولت لاہور قلندرز پہلی بار سیمی فائنل میں پہنچنے میں کامیاب ہوگیا۔

کورونا وائرس کے باعث پی ایس ایل میں شریک متعدد بین الاقوامی کھلاڑیوں نے ایونٹ سے دستبردار ہوکر اپنے ملک واپس جانے میں عافیت جانی ایسے میں لاہور قلندرز کے بین الاقوامی کھلاڑیوں نے پاکستان میں رہ کر کھیلنے کو ترجیح دی، آج ٹیم کو فتح دلوا کر کرس لین کا کہنا تھا "میں جیت کر خوشی محسوس کرتا ہوں، اگر میں گھر چلا جاتا تو مجھے دو ہفتوں کیلئے تنہائی میں بیٹھنا پڑتا،میں اس کے بجائے یہاں موجود ہوں اور چھکے لگا رہا ہوں، اگر میں چلا جاتا تو میں یہ اننگز گنوا دیتا”۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کرس لین کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا کے مقابلے میں برطانیہ میں صورتحال مختلف ہے، مجھے لاہور قلندرز میں کھیلنے والے بین الاقوامی کھلاڑیوں پر فخر ہے کہ وہ سب ساتھ کھڑے ہیں، ہمارا ایک کھلاڑی آج اپنے ملک واپس جارہا ہے کیونکہ اس کی فیملی اور چھوٹا بچہ ذیادہ اہم ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جیت کے تسلسل کو برقرار رکھیں گے، اور سیمی فائنل میں کراچی کنگز کے خلاف ٹیم لڑنے کیلئے مکمل تیار ہیں، انہوں نے کہا کراچی نے ہمیں دس وکٹوں سے شکست دی تھی اب ہمارے پاس موقع ہے اور ہماری جیت کے تسلسل سے ٹیم کا مورال بلند ہے ہم اپنے ہوم گراؤنڈ میں واپس آچکے ہیں اب ہم سب سے مضبوط ٹیم کو ہرانے کیلئے مکمل طور پر تیار ہیں۔

  • یہ پی۔سی۔بی کے منہ پر بھی چپیڑ ہے جس نے اسے زلمی کے میچ میں مین آف دی میچ نہیں دیا۔ جب کہ لن کی پروفارمنس سب سے بہتر تھی ہر لحاظ سے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >