خواجہ سعد رفیق ایک بار پھر نیب کے ریڈار پر،ایگزیکٹو بورڈ نے انکوائری کی منظوری دے دی

خواجہ سعد رفیق ایک بار پھر نیب کے ریڈار پر،ایگزیکٹو بورڈ نے انکوائری کی منظوری دے دی

قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر برائے ریلوے خواجہ سعد رفیق اور دیگر ریلوے افسران کے خلاف انکوائری کی منظوری دے دی۔

تفصیلات کے مطابق نیب کے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی زیرصدارت ادارے کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں 10 انکوائریز کی منظوری دی گئی۔ چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ بڑی مچھلیوں کے خلاف وائٹ کالرکرائمزکے میگا کرپشن مقدمات کوانجام تک پہنچانا اولین ترجیح ہے۔

اجلاس میں سابق وفاقی وزیربرائے ریلوے خواجہ سعد رفیق ، پاکستان ریلویز کے افسران اور دیگر، مظفر علی رانجھا، سابق ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب، نورالامین مینگل سابق ڈی سی او فیصل آباد، ہائی ویز ڈیپارٹمنٹ فیصل آباد کے افسران ، سٹی ڈسٹرکٹ حکومت فیصل آباد کے افسران ، میسر زیڈ کے بی ریلائیبل اور دیگر، چودھری شیر علی سابق میئر اور سابق رکن قومی اسمبلی فیصل آباد اور دیگر کے خلاف نیب انکوائریوں کی منظوری دے دی گئی۔

نیب اجلاس میں منشاء گروپ اوردیگر کے خلاف انوسٹی گیشن کی بھی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں محمد یاسین سابق تحصیل ناظم، غزالہ شاہین دختر محمد یاسین، غلام مرتضیٰ، اعظم سہیل اور دیگرکے خلاف انکوائری قانون کے مطابق مزید کاروائی کے لئے ایف بی آر اور ایف آئی اے کو بھیجنے کی منظوری دی گئی۔

اجلاس میں عدم ثبوت کی بنیاد پرقانون کے مطابق انکوائریز بند کرنے کی بھی منظوری دی گئی جن میں سہیل ظفررکن صوبائی اسمبلی پنجاب، رضوان ظفر سابق ٹاؤن ناظم گجرانوالا اور دیگر،ملک غضنفرعباس چیمہ، رکن صوبائی اسمبلی، محمد شیرچیمہ، ریونیوڈیپارٹمنٹ پنجاب کے اہلکاران اور دیگرکے خلاف انکوائریز شامل ہیں۔

اس موقع پر چیئرمین نیب جاوید اقبال نے کہنا تھا کہ نیب انسداد بدعنوانی کا قومی ادارہ ہے، نیب نے 2020 میں 323 ارب روپے بلواسطہ اور بلاواسطہ طور پرجبکہ اب تک 814 ارب روپے بدعنوان عناصر سے بلواسطہ اور بلا واسطہ طور پر برآمد کئے ہیں جو کہ ایک ریکارڈ کامیابی ہے۔

  • گشتی فراری کا لوہے کا چھولا اور نیولے اور چوہے کی دوغلی نسل
    جنرل ضیا کی مارشل لا کے وزیر کی زکات پر پلا ہوا دوٹکے کا کنجر سیاست میں آکر ارب پتی بن گیا ان ہی دو دوٹکے کے کنجروں نو دولتیوں حرامی نسل نے پورے پاکستان میں غلاظت پھیلائی ہوئی ہے
    فوج کے گٹر میں پیدا ہونے والے نطفہ حرام اپنی پیدا فوج پر بھونکنے والے ہی کنفرم نطفہ حرام ہوتے ہیں کہ جو پیدا کرے اسی پر بھونکوں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >